About

Administration

Academics

Admissions

Campuses

Campus Life

Quick Links

Ms. Sabeen Gull Khan visited IUB

PRO No. 503/PR
Date: 30/08/2021
Public Relations Office
The Islamia University of Bahawalpur
Member Provincial Assembly and Spokesperson to Punjab Chief Minister’s Punjab Ms. Sabeen Gull Khan has said that the Islamia University of Bahawalpur is a historical asset of South Punjab. He said that this university has been spreading new innovation of knowledge and research not only in Bahawalpur but also in the region as well as in the whole country for the last two years. The number of teachers at the Islamia University of Bahawalpur has doubled and the increase in the number of students by more than 40,000 is a breakthrough. He said that it was very important that the Islamia University of Bahawalpur has about 40 to 50 percent female students and a large number of female faculty members and female officers. He said that during the recent visit of the Prime Minister of Pakistan, it was a matter of great pride to acknowledge the abilities of Vice Chancellor Prof. Dr. Athar Mahboob and his services to the University and it was a welcome development for all the people of the region. He said that the government is providing all possible assistance for the development of higher education and education sector and a grant of Rs. 4 billion from the government for the Islamia University Bahawalpur including establishment of Ahmadpur East Campus and Institute of Physics and other modern departments. Admission campaign is going on in the Islamia University of Bahawalpur and in this regard people are coming to the campus which is an expression of the high academic standards of this university. Sabeen Gull Khan, Member Provincial Assembly, expressed these views while addressing a visit to the Islamia University of Bahawalpur and an introductory session organized by District Women Forum Multan. On this occasion, Pro Vice Chancellor Prof. Dr. Naveed Akhtar in his statement about the Islamia University of Bahawalpur said that in 1975 the Government of Punjab declared the Islamia University of Bahawalpur as a Chartered University and after that it touches new horizons of university development. There is higher education and research in Islamic sciences, pharmacy, engineering, sciences, social sciences and arts. He said that the Islamia University of Bahawalpur has recently introduced intercropping technology and new cotton seeds which have become the hallmark of the university. On the occasion, Registrar Prof. Dr. Moazzam Jameel welcomed the women delegation to the Islamia University of Bahawalpur and especially to the Abbasia Campus. Speaking on the occasion, Dean Faculty of Social Sciences Prof. Dr. Rubina Bhatti said that women in the Islamia University of Bahawalpur are excelling in every field and she as Chairperson of Women Harassment Committee is ensuring a safe and conducive environment for women. Prof. Dr. Raheela Khalid Qureshi said that for the last many years seminars on Islamic teachings of tolerance have been organized in the Faculty of Islamic Learning in which women, teachers and students increasingly participate. On the occasion, Prof. Dr. Yasmeen Rufi, Director Women Development Center briefed about the establishment of Women Development Center and its activities. Later, a delegation led by a Member Provincial Assembly from Multan visited Abbasia Campus and praised the historic campus.WhatsApp Image 2021-08-30 at 5.31.33 PM

پی آر او نمبر503/21، مورخہ30.08.2021 
پبلک ریلیشنز آفس، اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور
رکن صوبائی اسمبلی اور ترجمان وزیر اعلیٰ پنجاب محترمہ سبین گل خان نے کہا ہے کہ اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور جنوبی پنجاب کا تاریخی اثاثہ ہے۔ یہ یونیورسٹی گزشتہ دو برس سے نہ صرف بہاولپور بلکہ خطے کے ساتھ ساتھ پورے ملک میں علم اور تحقیق کی نئی جدت پھیلا رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپوروائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر اطہر محبوب کی قیادت میں صرف دو سال کے قلیل عرصے میں ہونے والی تبدیلیاں انتہائی خوش آئند ہیں۔ اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور میں اساتذہ کی تعداد دو گنا ہو گئی ہے اور طلباء کی تعداد میں 40ہزار سے زائد کا اضافہ انتہائی پیش رفت ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ بات انتہائی اہمیت کی حامل ہے کہ اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور میں تقریبا 40سے 50فیصد طالبات زیر تعلیم ہیں اور اسی طرح فی میل فیکلٹی ممبران اور خواتین افسران کی ایک بڑی تعداد کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان کے حالیہ دورے میں وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر اطہر محبوب کی صلاحیتوں کا اعتراف اور ان کی یونیورسٹی کی خدمات پر سراہنا انتہائی قابل فخر بات ہے اور اس علاقے کے تمام لوگوں کے لیے یہ ایک خوش آئند امر ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اعلیٰ تعلیم اور تعلیمی شعبے کی ترقی کے لیے ہر ممکن امداد فراہم کر رہی ہے اور اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور کے لیے حکومت کی جانب سے 4ارب روپے کی گرانٹ جس میں احمد پور شرقیہ کیمپس اور انسٹی ٹیوٹ آف فزکس اور دیگر جدید شعبہ جات کا قیام شامل ہے جو اس علاقے کی سماجی اور ترقی کے لیے بہترین مثال ہے۔ اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور میں داخلہ مہم جاری ہے اور اس حوالے سے لوگ جوک در جوک کیمپس آرہے ہیں جو اس یونیورسٹی کے اعلیٰ تعلیمی معیار کا اظہار ہے۔ رکن صوبائی اسمبلی سبین گل خان نے اِن خیالات کا اظہار اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے دورے اورڈسٹرکٹ ویمن فورم ملتان کے زیر اہتمام ایک تعارفی سیشن میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر پُرو وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر نوید اختر نے اپنے بیان میں اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے بارے میں بیان کرتے ہوئے کہا کہ 1975میں حکومت پنجا ب نے اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کو چارٹرڈ یونیورسٹی قرار دیا اور جس کے بعد یونیورسٹی ترقی کے نئے اُفق چھو رہی ہے۔ یہاں پر اسلامی علوم، فارمیسی، انجینئرنگ، سائنسز، سوشل سائنسز  اور آرٹس میں اعلیٰ تعلیم اور تحقیق جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور میں حال ہی میں انٹر کراپنگ ٹیکنالوجی اور کپاس کے نئے بیج متعارف کروائے ہیں جو یونیورسٹی کی پہچان بن چکے ہیں۔ اس موقع پر رجسٹرار پروفیسر ڈاکٹر معظم جمیل نے خواتین وفد کو اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور اور خاص طور پر عباسیہ کیمپس میں خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ عباسیہ کیمپس یونیورسٹی کا تاریخی کیمپس ہے جہاں پر یونیورسٹی کے رجسٹرار،کنٹرولر امتحانات، شعبہ قانون اور دو بڑے ہاسٹلز قائم ہیں۔ اس موقع پر ڈین فیکلٹی آف سوشل سائنسز پروفیسر ڈاکٹر روبینہ بھٹی نے بتایا کہ اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور میں خواتین ہر شعبے میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کررہی ہیں اور وہ بطورچیئرپرسن وویمن ہراسمنٹ کمیٹی اس یونیورسٹی کو یقینی بنا رہی ہیں کہ خواتین کیلئے ایک محفوظ اور سازگار ماحول میسر ہوجہاں پروہ سکون واطمینان سے اپنے کام سرانجام دیں سکیں۔پروفیسرڈاکٹرراحیلہ خالدقریشی نے کہا کہ فیکلٹی آف اسلامک لرننگ میں گزشتہ کئی برسوں سے برداشت کی اسلامی تعلیمات کے حوالے سے سیمینار منعقد ہوتے ہیں جن میں خواتین،اساتذہ اورطلباء طالبات بڑھ چڑھ کرحصہ لیتے ہیں۔ اس موقع پرپروفیسرڈاکٹریاسمین روفی نے وویمن ڈویلپمنٹ سینٹر کے قیام اور اس کی سرگرمیوں سے متعلق آگاہ کیا۔بعدازاں ملتان سے آئے ہوئے رکن صوبائی اسمبلی کی قیادت میں وفد نے عباسیہ کیمپس کادورہ کیااورتاریخی کیمپس کی تعریف کی۔

WhatsApp Image 2021-08-30 at 5.01.25 PMWhatsApp Image 2021-08-30 at 5.01.23 PM

© 2021 The Islamia University of Bahawalpur iub.edu.pk.